Pakistan Property Portal, Website
Pakistan Property Portal, Website Dark Mode Light Mode
Blogs News Event Area Guide Careers Register Agency Corporate Login

CDA to return 1.1M as NOC fee for CNG stations

Real Estate News
27 Jul 2021
CDA to return 1.1M as NOC fee for CNG stations

CDA to return 1.1M as NOC fee for CNG stations

Lahore: CDA has been asked to return 1.1 million as an NOC fee for CNG stations.

President Dr. Arif Alvi on Monday ordered a refund of Rs 1.1 million to the complainant, who was denied the return of the conversion fee deposited to Capital Development Authority (CDA) for setting up a Compressed Natural Gas (CNG) station.

Complainant Maj (retd) Masood Bajwa had filed a representation with the president, contesting the order of the Wafaqi Mohtasib, which had turned down his plea on the grounds of limitation and also on the basis of the CDA Board’s decision declaring the NOC fee as non-refundable.

The president, in his decision, stated that the complainant’s money, deposited for a specific purpose, could not be forfeited nor confiscated without the backing of the existing laws.

He said the CDA Board was not empowered to act on whims, especially when its actions deprive a citizen of his own money.

As per details of the case, Major (r) Masood Bajwa, after getting permission to install a CNG station in 2007 by CDA, had deposited a conversion fee amounting to Rs1.1 million.

After facing excessive delays in obtaining necessary NOCs from different departments, the complainant dropped the idea and requested CDA to refund the conversion fee.

The CDA rejected the request of the complainant on the basis of its board’s decision, dated 15.08.2013, wherein it decided that “in future, every NOC that is issued by CDA would be for a specific time period, the fee paid for obtaining NOC should be non-refundable and provision/condition to these effects must be specifically stated in the NOC to be issued”.

لاہور: سی ڈی اے سے سی این جی اسٹیشنوں کی بطور این او سی فیس 1.1 ملین واپس کرنے کو کہا گیا ہے۔

صدر ڈاکٹر عارف علوی نے پیر کے روز شکایت کنندہ کو 1.1 ملین روپے کی واپسی کا حکم دیا ، جس کو کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) اسٹیشن کے قیام کے لئے کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) میں جمع کنورژن فیس واپس کرنے سے انکار کردیا گیا تھا۔

شکایت کنندہ میجر (ر) مسعود باجوہ نے وفاقی محتصیب کے حکم پر مقابلہ کرتے ہوئے صدر کے پاس نمائندگی دائر کی تھی ، جس نے حد کی بنیاد پر ان کی درخواست کو مسترد کردیا تھا اور سی ڈی اے بورڈ کے این او سی فیس کو غیر قرار دینے کے فیصلے کی بنیاد پر بھی۔لاہور: سی ڈی اے سے سی این جی اسٹیشنوں کی بطور این او سی فیس 1.1 ملین واپس کرنے کو کہا گیا ہے۔

صدر ڈاکٹر عارف علوی نے پیر کے روز شکایت کنندہ کو 1.1 ملین روپے کی واپسی کا حکم دیا ، جس کو کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) اسٹیشن کے قیام کے لئے کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) میں جمع کنورژن فیس واپس کرنے سے انکار کردیا گیا تھا۔

شکایت کنندہ میجر (ر) مسعود باجوہ نے وفاقی محتصیب کے حکم پر مقابلہ کرتے ہوئے صدر کے پاس نمائندگی دائر کی تھی ، جس نے حد کی بنیاد پر ان کی درخواست کو مسترد کردیا تھا اور سی ڈی اے بورڈ کے این او سی فیس کو غیر قرار دینے کے فیصلے کی بنیاد پر بھی۔

صدر نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ شکایت کنندہ کے پیسے جو کسی خاص مقصد کے لئے جمع کیے جاتے ہیں ، موجودہ قوانین کی حمایت کے بغیر اسے ضبط نہیں کیا جاسکتا اور نہ ہی ضبط کیا جاسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سی ڈی اے بورڈ کو اختیارات نہیں دیا گیا تھا کہ وہ خواہشوں پر عمل کرے ، خاص طور پر جب اس کے اقدامات سے شہری شہری کو اپنے پیسے سے محروم کردیں۔

اس کیس کی تفصیلات کے مطابق ، میجر (ر) مسعود باجوہ نے سی ڈی اے کے ذریعہ 2007 میں سی این جی اسٹیشن لگانے کی اجازت ملنے کے بعد ، تبادلوں کی فیس ایک لاکھ دس لاکھ روپے میں جمع کروائی تھی۔

مختلف محکموں سے ضروری این او سی حاصل کرنے میں ضرورت سے زیادہ تاخیر کا سامنا کرنے کے بعد ، شکایت کنندہ نے اس خیال کو مسترد کردیا اور سی ڈی اے سے تبادلوں کی فیس واپس کرنے کی درخواست کی۔

سی ڈی اے نے مورخہ 15.08.2013 کو اپنے بورڈ کے فیصلے کی بنیاد پر شکایت کنندہ کی درخواست کو مسترد کردیا ، جس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ “مستقبل میں سی ڈی اے کے ذریعہ جاری کردہ ہر این او سی مخصوص مدت کے لئے ہوگا ، این او سی حاصل کرنے کے لئے ادا کی جانے والی فیس ہونی چاہئے۔ ناقابل واپسی اور ان اثرات کے لئے فراہمی / شرط کے بارے میں خصوصی طور پر این او سی کو جاری کیا جانا چاہئے۔

صدر نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ شکایت کنندہ کے پیسے جو کسی خاص مقصد کے لئے جمع کیے جاتے ہیں ، موجودہ قوانین کی حمایت کے بغیر اسے ضبط نہیں کیا جاسکتا اور نہ ہی ضبط کیا جاسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سی ڈی اے بورڈ کو اختیارات نہیں دیا گیا تھا کہ وہ خواہشوں پر عمل کرے ، خاص طور پر جب اس کے اقدامات سے شہری شہری کو اپنے پیسے سے محروم کردیں۔

اس کیس کی تفصیلات کے مطابق ، میجر (ر) مسعود باجوہ نے سی ڈی اے کے ذریعہ 2007 میں سی این جی اسٹیشن لگانے کی اجازت ملنے کے بعد ، تبادلوں کی فیس ایک لاکھ دس لاکھ روپے میں جمع کروائی تھی۔

مختلف محکموں سے ضروری این او سی حاصل کرنے میں ضرورت سے زیادہ تاخیر کا سامنا کرنے کے بعد ، شکایت کنندہ نے اس خیال کو مسترد کردیا اور سی ڈی اے سے تبادلوں کی فیس واپس کرنے کی درخواست کی۔

سی ڈی اے نے مورخہ 15.08.2013 کو اپنے بورڈ کے فیصلے کی بنیاد پر شکایت کنندہ کی درخواست کو مسترد کردیا ، جس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ “مستقبل میں سی ڈی اے کے ذریعہ جاری کردہ ہر این او سی مخصوص مدت کے لئے ہوگا ، این او سی حاصل کرنے کے لئے ادا کی جانے والی فیس ہونی چاہئے۔ ناقابل واپسی اور ان اثرات کے لئے فراہمی / شرط کے بارے میں خصوصی طور پر این او سی کو جاری کیا جانا چاہئے۔

Get ilaan App
Get ilaan App

To Buy, Sell & Rent properties on your
finger tips.

Get ilaan App
Get ilaan App
premium property portal to buy,sell and rent

The best property website to buy and sell properties. ilaan.com is Pakistan’s most comprehensive property website, portal, finder focused on improving the visual property viewing experience of users to help them make better-informed decisions regarding capital investment in the real estate sector.

Grab a Coffee

Address
Head office26-A, J3 Block, Johar Town,
Lahore Pakistan
Timings Monday - Friday: 9 am - 6 pm
Saturday: 9 am - 2 pm
Sunday: We are closed.

Call Us

Phone

Get Updated

Subscribe

To get the latest news about ilaan.com subscribe our newsletter.

(required)
Subscribe
Get my Location